Essay on Fashion In Urdu

فیشن پر ایک مضمون

فیشن سے مراد ایسی کوئی بھی چیز نہیں ہے جو عوام میں غم و غصہ بن جاتی ہے۔ فیشن ایک مشہور جمالیاتی اظہار ہے۔ انتہائی قابل ذکر بات یہ ہے کہ یہ ایسی چیز ہے جو آج کے وقت میں بہت مقبول و معروف ہے۔ لباس ، جوتے ، دیگر لوازمات ، میک اپ ، بالوں کے طرز ، طرز زندگی اور جسم کے تناسب میں فیشن صاف طور پر ظاہر ہوتا ہے۔ مزید یہ کہ فیشن ایک صنعت سے تعاون یافتہ اظہار ہے۔ عصری دنیا میں لوگ فیشن کو بہت سنجیدگی سے لیتے ہیں۔ فیشن ایسی چیز ہے جس نے انسانی ثقافت کے ہر پہلو کو پایا ہوا ہے۔

فیشن کی تاریخ

فیشن کا اصل سال 1826 سے ہے۔ شاید ہر ایک شخص کا خیال ہے کہ چارلس فریڈرک دنیا کا پہلا فیشن ڈیزائنر ہے۔ انہوں نے پیرس میں پہلا فیشن ہاؤس بھی قائم کیا۔ چنانچہ اس نے فیشن ہاؤسز کی روایت کا آغاز کیا۔ مزید برآں اس نے صارفین کو مشورہ دیا کہ ان کے لباس کیا مناسب ہوں گے۔ وہ 1826ء سے 1895ء تک نمایاں شکل میں تھا۔

اس مدت کے دوران بہت سے ڈیزائن ہاؤسز نے فنکاروں کی خدمات حاصل کیں ۔ مزید یہ کہ ان فنکاروں کا کام لباس کے لئے جدید ڈیزائن تیار کرنا تھا۔ گاہک بہت سے مختلف نمونوں کی جانچ پڑتال کرتے تھے۔ تب وہ اپنی پسند کی ایک چیز کو چن لیتے۔ اس کے نتیجے میں ایک روایت نے صارفین کو نمونوں کی پیش کش کی اور پھر ان کو سلائی کرنے کا آغاز کیا۔

20 ویں صدی کے آغاز میں فیشن میں نئی ​​پیشرفت ہوئی۔ یہ پیشرفت یقینی طور پر پہلے پیرس میں شروع ہوئی تھی۔ پھر وہ دنیا کے دوسرے حصوں میں پھیل گئی۔ اس کے نتیجے میں فرانس میں سب سے پہلے نئے ڈیزائن وجود میں آئے۔ پیرس سے وہ دنیا کے دوسرے حصوں میں گئے۔ لہذا پیرس دنیا کا فیشن دارالحکومت بن گیا۔ نیز اس دور میں فیشن ’ہاؤٹ کپچر‘ تھا۔ فیشن کا یہ ڈیزائن خصوصی طور پر افراد کے لئے تھا۔

20 ویں صدی کے وسط میں ایک تبدیلی واقع ہوئی۔ اب فیشن کے لباس کی بڑے پیمانے پر پیداوار ہوئی۔ فیشن گارمنٹس کی تیاری کی شرح میں نمایاں اضافہ ہوا۔ اس کے نتیجے میں زیادہ سے زیادہ لوگ فیشن گارمنٹس میں شامل ہوگئے۔ 20 ویں صدی کے آخر تک فیشن بیداری کا احساس بہت مضبوط ہو گیا تھا۔ اب لوگوں نے اپنے طرز کی ترجیح کی بنیاد پر کپڑے کا انتخاب کرنا شروع کیا۔ لہذا لوگوں نے موجودہ رجحانات پر بھروسہ کرنے کے بجائے اپنے رجحانات پیدا کرنا شروع کردیئے۔

فیشن کا رجحان

فیشن کو متاثر کرنے میں سیاسی اثرات یقیناً ایک اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ بہت سے سیاستدان فیشن کی علامت بن جاتے ہیں۔ پہلی مثال خاتون اول جیکولین کینیڈی اور شہزادی ڈیانا ہیں۔ نیز سیاسی انقلابات فیشن کے رجحان پر بہت زیادہ اثر ڈالتے ہیں۔ مثال کے طور پر 1960 کو امریکہ میں لبرل لباس کی طرزیں نوجوان نسل میں مقبول ہوگئیں۔ اس کی وجہ لبرل انقلاب ہوا تھا۔

ایک اور اہم عنصر جو فیشن کے رجحان کو متاثر کرتا ہے وہ ہے ٹیکنالوجی۔ یقینی طور پر فیشن انڈسٹری میں ٹکنالوجی کی تیز رفتاری سے ترقی ہوئی ہے۔ مثال کے طور پر پہننے کے قابل ٹیکنالوجی فیشن کا ایک مقبول رجحان بن گیا ہے۔ مزید یہ کہ تھری ڈی پرنٹنگ ٹکنالوجی اور انٹرنیٹ نے بھی فیشن پر خاصہ اثر ڈالا ہے۔

سماجی اثرات شاید فیشن کے رجحان پر سب سے زیادہ مضبوط اثرات ہیں۔ بہت سے میوزک اسٹارز فیشن کے انتخاب پر زور دیتے ہیں۔ مثال کے طور پر ریڈ میوزک کی وجہ سے ہیڈیز پہننا مشہور ہوا۔ مزید یہ کہ فلم اور ٹیلی ویژن کے اداکار فیشن پر بہت بڑا اثر ڈالتے ہیں۔ بہت سارے نوجوان اپنی پسند کی مشہور شخصیت کے فیشن احساس کی تقلید کرتے ہیں۔

اس کا خلاصہ یہ ہے کہ فیشن یقینی طور پر انسانی زندگی کا ایک اہم جزو اور جز بن گیا ہے۔ یہ یقینی طور پر ایک ایسی طاقت ہے جو یہاں رکنے کے لئے ہے۔ سب سے اہم بات یہ ہے کہ فیشن نے زمین پر ہر جگہ غرق کردیا ہے۔

Close