Advertisement

⭕️ سابقے उपसर्ग⭕️

سابقے : کسی بھی لفظ کے شروع میں کوئی دوسرا لفظ جوڑا جائے اسے سابقہ کہتے ہیں۔ مثال: "کار” کے شروع میں "بے” جوڑنے پر "بے کار” ہوتا ہے۔
نوٹ:- اس طرح لفظ کے شروع میں جڑنے والے لفظوں کو سابقہ کہتے ہیں۔

Advertisement
سابقے الفاظ
ان ان پڑھ، ان بن، انجان، انمول
با با اثر، با ادب، با تمیز، با خبر
بد بدمزاج، بد چلن، بدبو
بے بے وفا، بےشرم، بے عزت
لا لافانی، لاجواب، لاچار
نا ناپاک، نالائق، ناامید، ناسمجھ
نو نوجوان، نوعمر، نوکرانی
نیم نیم روز، نیم باز، نیم حکیم
سر سربلند، سرسبز، سرفراز
کم کم عقل، کم بخت، کمزور
غیر غیر مزہب، غیر مسلم، غیر حاضر
عالی عالیشان، عالی مرتبہ، عالی مقام
خوش خوش اخلاق، خوش قسمت، خوش مزاج
ہم ہم سفر، ہم خیال، ہم عمر
ہر ہر ایک، ہرکام، ہر گھڑی، ہروقت

⭕️ لاحقہ प्रत्यय⭕️

لاحقہ: کسی لفظ کے آخر میں کوئی دوسرا لفظ جوڑا جاۓ تو اسے لاحقہ کہتے ہیں۔ مثال: "شان” کے آخر میں "دار” جوڑنے پر "شاندار” ہوتا ہے۔
نوٹ:- اس طرح لفظ کے آخر میں جڑنے والے لفظوں کو لاحقہ کہتے ہیں۔

Advertisement
لاحقہ الفاظ
آئی بھلائی، پڑھائی، سلائی، لڑائی
تر بہتر، مہتر، کمتر
پن بچپن، بانکپن، بھولاپن
بند نظربند، کمربند، چک بند
باز آتشباز، دھوکہ باز، دغاباز
آس گلاس، پیاس، مٹھاس
خانہ پاگل خانہ، کارخانہ، کتب خانہ
گی ناراضگی، سادگی، بندگی
گری نیتاگری، داداگری، چمچاگری
گر کاریگر، رفوگر، چارہ گر
گاہ عیدگاہ، خواب گاہ، آرام گاہ
کار بےکار، بدکار، مکار
دان پاندان، گلدان، خاندان
دار چوکیدار، بیلدار، پہرےدار
مند عقلمند، دولت مند، احسان مند
یاب سزایاب، دستیاب، کامیاب
وار امیدوار، سوموار، سلسلےوار
ور طاقتور، نامور، جانور
نما خوشنما، بدنما، رہنما
ناک دردناک، خوفناک، خطرناک
لن چلن، مالن، جلن، لگن، پالن
نگار افسانہ نگار، منظر نگار، سوانح نگار
آوٹ بناوٹ، سجاوٹ، لکھاوٹ
تحریر ارمش علی خان محمودی بنت طیب عزیز خان محمودی⭕️
Advertisement

Advertisement
Advertisement