Advertisement
رنج کا مارا ہوا میں
زندگی کے پیچ وتاب میں گم
نا جانے کن خیالوں میں ڈوب کر
اکثر تیری یادوں کے دیے
جلا کر بجھا دیتا ہوں۔
وقار احمد
Advertisement
Advertisement

Advertisement

Advertisement