پاکستانی کلچر پر ایک مضمون

پاکستان اسلامی جمہوریہ کے نام سے جانا جاتا ہے۔ پاکستان ایک ایسی قوم ہے جو جنوبی ایشیاء میں واقع ہے۔ اس قوم کے متعدد نسلی گروہ اور ثقافتیں موجود ہیں جیسے پنجابی ، کشمیری ، مہاجر ، پشتون ، شنکی ، اور کچھ دیگر کمیونٹیز جو پورے ملک میں پھیلی ہوئی ہیں۔ ان ثقافتوں کو چھوڑ کر یہ گروہ ایک نئی ثقافت کی شکل میں سامنے آئی ہے جو پڑوسی ممالک اور ان کی ثقافتوں سے بہت زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔ پاکستان کی ثقافت جنوبی ایشیاء کی دوسری اقوام سے بھی منفرد ہے۔

پاکستان کی زبانیں

پاکستان ملک کی آبادی 60 سے زیادہ زبانیں بولتی ہے اور ان سب میں اردو کو قومی زبان بنایا گیا ہے جس کو بولنے والوں کا ایک بہت بڑا طبقہ ہے۔ اردو قومی زبان ہونے کے علاوہ مسلمانوں کی زبان بھی ہے۔ ملک میں اردو بنیادی زبان ہونے کے باوجود بھی آبادی کا صرف ٪8 طبقہ ہی اسے بنیادی زبان کے طور پر استعمال کرتا ہے۔ دوسری سرکاری زبان انگریزی ہے جو حکومت اور قانونی امور کے لئے استعمال کی جاتی ہے۔ بیشتر حصے میں عوام انگریزی کی ایک خاص تغیر کا استعمال کرتی ہے جسے پاکستانی انگریزی کہا جاتا ہے۔ ان دونوں زبانوں کے علاوہ عربی کو اسلام کی تعلیم میں ایک اہم زبان کا درجہ عطا کیا گیا ہے۔

ان کے علاوہ پاکستان کی سب سے عام زبان پنجابی زبان ہے۔ آبادی کا ٪ 44.15 حصہ اس زبان کا استعمال کرتا ہے اور یہ زبان زیادہ تر پنجاب کے آس پاس کے علاقوں میں استعمال کی جاتی ہے۔ دوسری زبانوں میں سندھی شامل ہے جو زیادہ تر سندھ میں بولی جاتی ہے۔ سرائیکی زبان جو زیادہ تر ہندوستان کے جنوبی پنجاب اور زیادہ تر خطوں میں بولی جاتی ہے۔ نیز اس میں دوسری زبانیں بھی شامل ہیں۔ قوم کے پانچوں صوبوں میں سے ہر ایک میں ایک صوبائی زبان موجود ہے جسے قومی قانون نے تسلیم نہیں کیا۔

پاکستان کا کھانا

ایشیاء کے بیشتر ممالک کی طرح پاکستان میں بھی کھانا اس کے پڑوسیوں سے متاثر ہوتا ہے۔ پاکستان کے معاملے میں بیرونی اثر و رسوخ عام طور پر افغانستان اور مشرق وسطی سے ہے۔ ملک کے مختلف خطوں میں کھانا پکانے کے انداز اور تکنیک میں کافی فرق ہوتا ہے۔ مثال کے طور پر صوبہ سندھ اور پنجاب اپنے مسالہ دار کھانوں کے لئے جانا جاتا ہے جو ہندوستانی کھانے سے کافی ملتا جلتا ہوتا ہے۔ اس کے برعکس شمالی و مغربی صوبوں جیسے آزاد جموں و کشمیر اور خیبر پختون میں ایسا کھانا تیار کیا جاتا ہے جو ہلکا اور کم مسالے دار ہوتا ہے جو وسطی ایشیاء کے باورچی خانے سے متعلق طرز کے جیسا ہے۔ پاکستانی کھانے میں بریانی ، ابلا ہوا چاول ، اور کباب سب سے زیادہ پسند کیے جاتے ہیں۔
مقامی کھانوں کے علاوہ بین الاقوامی طرز نے بھی قوم کو متاثر کیا ہے۔ در حقیقت فیوژن فوڈ ایک عام رواج ہے خاص طور پر ملک کے شہری علاقوں میں۔ فیوژن فوڈ کی ایک مثال پاکستانی چینی کھانا ہے۔

شعر و شاعری

پاکستان میں انگریزی شاعری ، بلوچی شاعری ، اور پشتو شاعری جیسے مختلف زمروں میں درجہ بند نظموں کا بھرپور ذخیرہ ہے۔ صوفی شاعری کا ایک اور زمرہ ملک میں مضبوطی سے جڑ گیا ہے۔ چونکہ اس خطے کو پرانے ادوار میں فارسی حکمرانوں کی زبردست پذیرائی حاصل تھی لہذا یہاں کی فارسی شاعری کافی مشہور ہے۔ شاعری صرف قومی سطح پر ہی نہیں بلکہ صوبائی سطح پر بھی کی جاتی ہے۔ چونکہ 1947 میں آزادی کے بعد اردو قومی زبان بن گئی تھی اور اب زیادہ تر نظمیں اردو میں ہی لکھی جاتی تھیں۔ اردو میں نظمیں لکھنے والے کچھ مشہور شاعروں میں احمد فراز ، احمد ندیم قاسمی ، اور فیض احمد فیض کے نام اہم ہیں۔

تقریبات

پاکستان میں بہت ساری تقریبات وقتاً فوقتاً عمل میں آتی رہتی ہیں۔ مسلمان آبادی والے کسی بھی دوسرے ملک کی طرح پاکستان بھی رمضان المبارک کا مقدس مہینہ مناتا ہے اور اس مہینے کے دوران تمام مسلمان صبح سے شام تک روزے رکھتے ہیں اور زیادہ کثرت سے مساجد میں شریک ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ رمضان المبارک کے مقدس مہینے کے موقع پر عید الفطر اور عید الاضحی جیسے تہوار بھی مناۓ جاتے ہیں۔

مذہبی تقریبات کے علاوہ قوم ہر 14 اگست کو یوم آزادی کے موقع پر جشن مناتی ہے جب پاکستان نے برطانوی ہندوستان سے آزادی حاصل کی تھی۔ اس خصوصی دن کے موقع پر ملک بھر میں کئی مساجد میں لوگ قومی نماز کے لئے جمع ہوتے ہیں۔ صبح آزادی کی جنگ میں اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھنے والوں کو 21 توپوں کی سلامی کے ذریعے یاد کیا جاتا ہے۔ دیگر پروگراموں میں قومی ترانہ گایا جاتا ہے اور شہروں اور عمارتوں کو سجایا جاتا ہے۔

تفریح ​​اور کھیل

فیلڈ ہاکی پاکستان کا باضابطہ طور پر تسلیم شدہ کھیل ہے حالانکہ اسکواش اور کرکٹ زیادہ مقبول ہیں۔ قومی فیلڈ ہاکی ٹیم کو ہاکی ورلڈ کپ میں کچھ کامیابی ملی ہے کیوں کہ اس نے چار بار ٹرافی اپنے نام کی ہے۔ قومی کرکٹ ٹیم نے 1992 کا کرکٹ ورلڈ کپ جیتا ہے اور اس کے بعد 1999 میں رنر اپ کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا۔ قوم 1987 اور 1996 کے کرکٹ ورلڈ کپ کے میزبان بھی کھیل چکی ہے۔ کرکٹ ٹیم نے دیگر تعریفیں جیسا کہ 2009 کے آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی، ایشیا کپ ، اور آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی 2017 میں جیتا ہے۔

بین الاقوامی سطح پر قوم نے سمر اولمپکس میں کھیلوں میں حصہ لیا ہے جن میں فیلڈ ہاکی ، ایتھلیٹکس ، شوٹنگ ، باکسنگ ، اور تیراکی شامل ہیں۔ ہاکی وہ کھیل ہے جس میں پاکستانیوں نے سب سے زیادہ کامیابی 1960 ، 1968 ، اور 1984 میں تین طلائی تمغے جیتنے کے بعد حاصل کی تھی۔ 2005 میں اس کے آغاز کے بعد سے گراں پری ریسنگ نے بھی کچھ مقبولیت حاصل کی۔ ایک اور کھیل جو عروج پر ہے وہ فٹ بال۔


دستکاری

پاکستان کو بین الاقوامی سطح پر دستکاری میں بڑا امتیاز حاصل ہے۔ چنیوٹ کا لکڑی کا فرنیچر ، سیالکوٹ کا کھیلوں کا سامان اور ملتان اور حیدرآباد کی کڑھائی دنیا بھر میں مشہور ہے۔

موسیقی

پاکستانی موسیقی کی مختلف اقسام کی نمائندگی ہوتی ہے۔ اس میں قوالی اور غزل جیسے روایتی انداز کی زیادہ جدید شکلیں ہیں جو روایتی پاکستانی موسیقی کو مغربی موسیقی کے ساتھ ملا دیتے ہیں۔

سیاحت

پاکستان میں ثقافتوں ، لوگوں اور زمین کی تزئین کی آمیزش کی وجہ سے سیاحت کی صنعت بڑھ رہی ہے۔ موہنجوداڑو ، ہڑپہ اور ٹیکسلا کی قدیم تہذیبی کھنڈرات ، مراریی کے پہاڑی اسٹیشنوں تک ، اور شوگنان اور سری پای کی پیدل سفر والی پٹریوں ، ہر ایک کے پاس ہر طرح کے مسافر کو کچھ پیش کش ہے۔ پاکستان کے شمالی حصوں میں بہت سے پرانے قلعے اور برج ہیں۔ یہاں کے لوگوں کے ساتھ گلگت ، ہنزہ اور چترال کی وادیاں خاص طور پر خوبصورت مقامات ہیں۔

Advertisements