Advertisement

بکری پر ایک مضمون

بکری ایک بہت ہی مفید جانور ہے۔ قدیم زمانے سے ہی بکری پالتو جانور کی طرح پالی جاتی ہے۔ بکری کی ایک چھوٹی دم ہوتی ہے جو اس کے دو چھوٹے سینگوں کے علاوہ اوپر کی طرف اٹھی ہوتی ہے۔ یہ دنیا کے ہر گوشے میں پائی جاتی ہے۔

Advertisement

بکری کے چار پیر اور دو چھوٹی چھوٹی آنکھیں ہوتی ہیں۔ بکری کئی رنگوں کی ہوتی ہے جیسے کالا ، لال ، بھورا ، سفید وغیرہ۔ بکریوں کے سارے جسم میں گھنے بال ہوتے ہیں۔ بکریوں کی کچھ ایسی ذاتیں بھی ہیں جن کا وزن صرف 10 سے 15 کلو گرام ہے جبکہ کچھ ایسی بھی ہیں جن کا وزن 30 سے ​​40 کلوگرام سے زیادہ ہوتا ہے۔

Advertisement

بکری کے کھر گائے کے کھروں کی طرح ہوتے ہیں۔بکریوں کی کئی اقسام ہیں جو الگ الگ جگہوں پر الگ الگ ہوتی ہیں۔ ہندوستان میں بکری کی کاشتکاری بڑے پیمانے پر کی جاتی ہے۔ ان کی اصل خوراک گھاس اور چھوٹے پتے ہوتے ہیں۔ یہ ایک قافلے میں رہنے والا جانور ہے۔

Advertisement

قدیم زمانے سے ہی بکریاں پالتو جانوروں کی طرح پالی جاتی ہیں۔ ہندوستان میں بکری پالنے کا عمل بڑے پیمانے پر ہوتا ہے۔ پوری دنیا میں بکریوں کی بہت سی قسمیں پائی جاتی ہیں جیسے پہاڑی بکری ، زمینی بکری وغیرہ۔ بکری اکیلے رہنے کی بجائے قافلے میں رہنا زیادہ پسند کرتی ہے۔ اس کے بچوں کو میمنہ کہتے ہے۔

بکریوں کی تقریباً 300 نسلیں دنیا بھر میں پائی جاتی ہیں۔ اور بکری ایک ایسا مفید جانور ہے جو اپنی زندگی کے دوران اور اس کے مرنے کے بعد بھی بہت مفید ثابت ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ بکری ہمیں دودھ دیتی ہے۔ بکری کے دودھ میں بہت زیادہ غذائیت والے عناصر پائے جاتے ہیں۔ چھوٹے بچوں کے لئے بکری کا دودھ بہت فائدہ مند ہوتا ہے۔ بکری کا دودھ سوجن اور جلن سے راحت اور ملیریا جیسی خطرناک بیماری میں بھی کام دیتا ہے اور اس کے دودھ سے پنیر بھی بنایا جاسکتا ہے۔ بکریوں کے سینگ سے بہت ساری قسم کی اشیاء تیار کی جاتی ہیں۔

Advertisement

بنیادی طور پر میدانی علاقوں میں ، پہاڑوں اور پلوٹو کے علاوہ پہاڑی علاقوں میں بھی اس کی پرورش کی جاتی ہے۔ ان کی عمر تقریباً 15 سے 18 سال تک ہوتی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ بکری ہمارے لئے ہر طرح سے ایک کارآمد جانور ہے جو ہماری زندگی میں خصوصی اہمیت رکھتی ہے۔

بکریوں کی کچھ اقسام کے نام درج ذیل ہیں جو پوری دنیا میں پائی جاتی ہیں۔

  • 1 بور گوٹ
  • 2 سانن گوٹ
  • 3 انگلو۔نیوبین گوٹ
  • 4 پگمی گوٹ
  • 5 الپائن گوٹ
  • 6 جمناپاری گوٹ
  • 7 نائجیرین اوورف گوٹ
  • 8 بیٹل گوٹ
  • 9 امیریکن لمانچا گوٹ
  • 10 ڈمسکس گوٹ
  • 11 کاموری گوٹ
  • 12 انگورا گوٹ
  • 13 پہاڑی گوٹ
  • 14 زمینی گوٹ
Advertisement

Advertisement

Advertisement