دوستی پر ایک مضمون

دوستی ایک بہت ہی قیمتی اور خاص رشتہ ہوتا ہے۔ جس کا سچا دوست ہو وہ انسان اس دنیا میں خوش قسمت ہے۔ یہاں تک کہ اگر آپ کے پاس دنیا کی دولت اور لذت ہے لیکن پھر بھی آپ اتنا خوش نہیں رہ سکتے جتنا کہ ایک دوست کے ساتھ خوش رہ سکتے ہیں۔ اگر آپ کے پاس کچھ بھی نہ ہو اور صرف ایک سچا دوست ہو تو آپ اس کے ساتھ اپنی زندگی کو اچھے سے بسر کر سکتے ہیں۔ ایک شخص کو اپنی خوشی اور غم بانٹنے کے لئے ایک سچے دوست کی ضرورت ہوتی ہے۔ وہ چیزیں جو وہ اپنے کنبے کے ساتھ بانٹ نہیں سکتے لیکن دوست کے ساتھ بانٹ سکتے ہیں ، ذہنی مایوسی سے بچ سکتے ہیں اور صحت مند زندگی گزار سکتے ہیں۔ اگر آپ کے پاس ایک سچا دوست نہیں تو پھر آپ کی زندگی اطمینان کے ساتھ نہیں گزر سکتی اور وہ ہمیشہ بے چین رہتا ہے۔ ایک حقیقی دوست ہمارے جذبات کو سمجھتا ہے اور ان پر قابو پانے میں ہماری مدد کرتا ہے۔

دوستی کسی کے ساتھ بھی ہوسکتی ہے چاہے وہ ساتھی ہو ، ہم جماعت ہو ، رشتہ دار ہو یا ہمسایہ ہو۔ سچی دوستی نہ تو عمر دیکھتی ہے اور نہ ہی ظاہری شکل اور نہ ہی دولت۔ یہ واحد تعلق ہے جو فرد خود ہی چنتا ہے۔باقی سب رشتے جو ہمیں کنبے سے ملتے ہیں ان کے کوئی نہ کوئی معنی ضرور ہوتے ہیں لیکن یہ دوستی رشتہ ایک ایسی چیز ہے جو بغیر کسی معنی کے کیا جاتا ہے۔ زندگی میں حقیقی دوستی کا حصول آسان کام نہیں ہے لیکن جب ایسا دوست مل جاتا ہے تو کوئی بھی اپنی سچی دوستی کو کسی قیمت پر نہیں کھونا چاہتا ہے۔ سچی دوستی میں ہم اپنے دوست کی بھلائی کے لئے سب کچھ قربان کر سکتے ہیں۔ دوستی میں دوست اپنے دوست کو ایک دوسرے کی برائی کے بارے میں فکر کیے بغیر منفی سے مثبتیت کی طرف بڑھنے میں مدد کرتا ہے۔ دوستی میں ہم ایک دوسرے کا خیال رکھتے ہیں اور اپنے دوست کی بھلائی کے لئے کچھ بھی کرنے کو تیار ہو جاتے ہیں۔

کچھ دوستیاں ایسی ہوتی ہیں جو بڑھاپے تک قائم رہتی ہیں اور بڑھاپے میں ایک دوسرے کی مدد بھی کرتی ہیں۔ دوستی ہمیں زندگی میں بہت سے کھٹے اور میٹھے تجربات دیتی ہے جس سے ہم بہت کچھ سیکھتے ہیں۔ کچھ لوگ چاپلوسی کرتے ہیں اور اپنے فائدے کے لیے اچھے دوست بننے کا بہانہ کرتے ہیں لیکن ایک سچا دوست ہمیشہ چاپلوسی کے بغیر بات کرتا ہے اور یہاں تک کہ ہمیں اپنی غلطیوں کو سدھارنے کی طرف راغب کرتا ہے۔ ایک دوسرے کی دیکھ بھال اور مدد کرنے سے یہ تعلق اور مضبوط ہوتا ہے۔ ہمیں سچے دوست کے انتخاب میں محتاط رہنا چاہئے۔ ایک سچا دوست ہمیں کبھی بھی غلط راہ اختیار کرنے کی ترغیب نہیں دیتا۔ اگر آپ کا دوست آپ کو غلط راستے پر لے جارہا ہے تو اس انسان سے ہوشیار رہیں اور فاصلہ رکھیں کیونکہ سچا دوست آپ کو کوئی غلط کام نہیں کرنے دے گا۔

ہماری اہمیت یا عزت نفس کی وجہ سے کئی بار ہماری دوستی ٹوٹ جاتی ہے اور ہم ایک اچھے دوست سے محروم ہوجاتے ہیں۔ لیکن اپنی اہمیت کو اپنے دوست سے بڑا مت سمجھو اور اپنے دوست کو زیادہ اہمیت دے کر اپنی دوستی کو محفوظ رکھنے کی کوشش کرو کیوں کہ ایک بار دراڑیں پڑ گئیں پھر اسی اعتماد کو قائم کرنا ناممکن ہے۔

ایک سچے دوست کی ہمیشہ ہر انسان کو تلاش کرنی چاہیے کیونکہ سچا دوست خدا کا سب سے خوبصورت اور قیمتی تحفہ ہوتا ہے۔ دوستی کسی بھی شخص کی زندگی میں ایک ستون کی حیثیت سے کام کرتی ہے جو اسے نازک وقتوں میں ثابت قدم رہنے میں مدد دیتی ہے اور زندگی کے مشکل اوقات میں معاون ثابت ہوتی ہے۔ لہذا جو انسان دوستی کی قدر کرتا ہے وہ اپنی زندگی میں خوش رہتا ہے۔

Advertisements