صنعت حسن تعلیل

یہ صنائع معنوی کی ایک اہم قسم ہے۔ تعلیل کے لغوی معنی "وجہ متعین کرنا یا وجہ بیان کرنا” کے ہیں۔ اصطلاح میں حسن تعلیل سے مراد ہے کہ کسی چیز یا امر کی حقیقی علت یا وجہ سے توجہ ہٹا کر اس کی کوئی اور وجہ بیان کی جائے۔ مگر اس میں کوئی شاعرانہ جدت و نزاکت ہو اور وہ پرلطف ہو۔ مثلاً:

کونسی ہے وہ مصیبت مجھ پہ جو ٹوٹی نہیں
رات دن گردش میں ہیں ہفت اسمان میرے لیے

Advertisement

ایک اور مثال ملاحظہ ہو

سجدہ شکر میں ہے شاخ ثمردار ہر اک
دیکھ کر باغ جہاں میں کرم عزوجل

اس شعر میں شاخوں کا جھکنا تو فطری بات ہے مگر شاعر نے شعر میں اپنی علت بیان کی ہے۔