تعارف

محمد عاصم بٹ لاہور میں پیدا ہوئے۔ محمد عاصم بٹ ایک اردو ناول نگار ، مختصر کہانی کے مصنف ، مترجم ، محقق ، ایڈیٹر ، نقاد اور صحافی ہیں۔ انہوں نے انگریزی سے اردو میں ترجمہ کیے اور اس کے برعکس متعدد کتابوں کے ساتھ ایک ناول اور مختصر کہانیوں کے دو مجموعے شائع کیے ہیں۔ بٹ انگریزی میں بھی لکھتے ہیں اور انہوں نے (انگریزی میں چار سنتوں کی کلاسیکی کہانی کا بیان) شائع کیا ہے۔

محمد عاصم بٹ نے گورنمنٹ کالج یونیورسٹی ، لاہور ، پاکستان سے فلسفہ میں ماسٹر ڈگری حاصل کی۔ انہوں نے بطور صحافی اپنے کیریئر کا آغاز کیا لیکن جلد ہی انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے غیر سرکاری اداروں سے وابستگی اختیار کی۔ حال ہی میں ، وہ پاکستان اکیڈمی آف لیٹرز ، گورنمنٹ کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔ ایک معروف ادبی رسالہ "سہ ماہی ادبیات” کے ایڈیٹر کی حیثیت سے وہ اسلام آباد ، پاکستان میں رہتے ہیں۔

ادبی زندگی

محمد عاصم بٹ نے ادبی زندگی کی شروعات شاعری سے  کی۔ تاہم جلد ہی میلان طبع کی وجہ سے کہانی کاری کی طرف متوجہ ہوئے۔ پہلی کہانی ۱۹۸۹ء میں ماہنامہ "ماہ نو” میں شائع ہوئی۔ ۱۹۹۸ء میں کہانیوں کا پہلا مجموعہ "اشتہار آدمی” کے نام سے اور ۲۰۰۹ء میں دوسرا مجموعہ "دستک” کے نام سے شائع ہوا۔  ۲۰۰۱ء میں ناول "دائرہ” شائع ہوا۔ آپ عالمی ادب پر گہری نگاہ رکھتے ہیں۔ محمد عاصم نے سیموئل بیکٹ کے شہرہ آفاق ڈرامے "گوڈو کے انتظار میں” کے علاوہ کافکا اور بورخیس کی کہانیوں کو بھی  اردو میں ترجمہ کیا۔  محمد عاصم بٹ کی اب تک درجن بھر سے زائد کتابیں چھپ چکی ہیں۔ اردو کے ساتھ ساتھ انگریزی میں بھی لکھتے ہیں۔

اعزازات

نیشنل یونیورسٹی آف ماڈرن لینگوئجز، اسلام آباد پاکستان کے شعبہ اردو نے محمد عاصم بٹ کی فکشن نگاری پر ایم اے کی سطح کا تحقیقی مقالہ لکھوایا ہے۔ پنجاب یونیورسٹی لاہور اور اسلامک انٹرنیشنل یونیورسٹی، اسلام آباد کے اردو کے شعبوں میں محمد عاصم بٹ کے ناولوں اور کہانیوں کے حوالے سے بالترتیب ایم فل اور ایم اے کے تحقیقی مقالے لکھے جا رہے ہیں۔
"تین نئے ناول نگار” کے عنوان سے ایک کتاب شائع ہوئی ہے جس میں محمد عاصم بٹ کی ناول نگاری پر طویل مقالہ شامل ہے۔ بٹ کا لٹریچر ماسٹرز کی سطح پر تحقیقی مضمون برائے قومی زبان برائے جدید زبان ، اور ایم فل کی پنجاب یونیورسٹی ، بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی ، اسلام آباد میں تحقیق کا موضوع رہا ہے۔

تصانیف

  • اشتہار آدمی (کہانیوں کا مجموعہ)
  • دائرہ (ناول)
  • دستک (کہانیوں کا مجموعہ)
  • تراجم (انگریزی سے اردو میں)
  • ناتمام (ایک غیر ختم ہونے والی کہانی) (ناول) ،
  • بھید (خفیہ ناول)
  • چار سنتوں کی کہانی (فارسی کلاسیکی کہانی کا قصہ ’قصہ چاہار درویش‘ انگریزی میں)

حرفِ آخر

اب بھی بہت سے ناول عاصم بٹ کے زیرِ قلم ہیں اور تخلیق کے مراحل سے گزر رہے ہیں۔ محمد عاصم بٹ کی موجوگی یقیناً اردو ادب کے لیے ایک تحفہ ہے۔

Advertisements