Advertisement
سارے کِھلونے چھوڑ کر
جذبات سے کھیلتے ہیں لوگ
دوست دوست نہیں دل کی وفا ہو تے ہیں
محسوس تب ہوتے ہیں جب وہ جدا ہوتے ہیں
اچھا جائیں، نصیب اچھے ہوں
ہم بھی کوشش کریں گے جینے کی
مکمل چھوڑ دو مجھ کو یا پھر میرے ہی ہو جاؤ
مجھے تکلیف دیتا ہے کبھی کھونا کبھی پانا
زہر لہجوں میں آ گیا
سانپ جنگلوں میں جا بسے
Advertisement

Advertisement

Advertisement

Advertisement
Advertisement