Advertisement
تجھے عشق ہو خدا کرے
کوئی تجھ کو اس سے جدا کرے
تیرے ہونٹ ہنسنا بهول جائیں
تیری آنکھ پرنم رہا کرے
تو اس کی باتیں کیا کرے
تو اس کی باتیں سنا کرے
اسے دیکھ کے تو رک پڑے
وہ نظر جھکا کے چلا کرے
تجھے ہجر کی ایسی جهڑی لگے
تو ملن کی ہر پل دعا کرے
تیرے خواب بکھریں ٹوٹ کر
تو کرچی کرچی چنا کرے
تو نگر نگر پهرا کرے
تو گلی گلی صدا کرے
تیرے سامنے تیرا گهر جلے
تیرا بس چلے نہ بجھا سکے
تیرے دل سے یہی دعا نکلے
نہ گهر کسی کا جلا کرے
تجھے عشق ہو پهر یقین ہو
اسے تسبیحوں پہ پڑها کرے
میں کہوں کہ عشق ڈهونگ ہے
تو نہیں نہیں کیا کرے
تجهے عشق ہو خدا کرے
تجھے عشق ہو خدا کرے 1