Advertisement

اکبر الہ آبادی کی زمانے میں انگریزی تہذیب و تمدن پوری طرح مشرقی تہذیب پر اثر انداز ہو چکا تھا۔ انگریزی بودوباش سب کو پیاری تھی۔ انگریزی تعلیم حاصل کرنے کے لیے لڑکیوں کو لندن بھیجا جاتا تھا۔ لیکن اس کی تمام تر ذمہ داری ہمارے بزرگ تھے۔

زمانے کے ساتھ لوگوں کے مزاج بدل جائیں گے۔ نئی نئی طرح کی خوشیاں،اور نئے نئے غم ہوں گے۔ لوگوں کے مذہبی عقیدے پر زوال ہوگا۔ اکبر نے یہ تمام باتیں بتادیں ہیں جو حقیقت ہے۔اکبر کو افسوس اس تبدیل پر تھا مگر اطمینان تھا کہ مستقبل کے آنے تک اکبر خود اس ماحول کو دیکھنے کے لئے زندہ نہ رہ ہیں گے۔

Advertisement
Advertisement

Advertisement