• وہ آنکھ زبان ہوگئی ہے
  • ہر بزم کی جان ہوگئی ہے
  • آنکھیں پڑتی ہیں مے کدوں کی
  • وہ آنکھ جوان ہوگئی ہے
  • آئینہ دکھا دیا یہ کس نے
  • دنیا حیران ہو گئی ہے
  • اب تو تری ہر نگاہ کافر
  • ایمان کی جان ہو گئی ہے
  • ترغیب گناہ لحظہ لحظہ
  • اب رات جوان ہو گئی ہے
  • توفیق نظر سے مشکل زیست
  • کتنی آسان ہوگئی ہے
  • تصویر بشر ہے نقش آفاق
  • فطرت انسان ہو گئی ہے
  • پہلے وہ نگاہ اک کرن تھی
  • اب اک جہان ہوگئی ہے
  • سنتے ہیں کہ اب نواے شاعر
  • صحرا کی اذان ہوگئی ہے
  • اے موت بشر کی زندگی آج
  • تیرا احسان ہوگئی ہے
  • کچھ اب تو امان ہوکہ دنیا
  • کتنی ہلکان ہو گئی ہے
  • یہ کس کی پڑھی غلط نگاہیں
  • ہستی بہتان ہوگئی ہے
  • انسان کو خریدتا ہے انسان
  • دنیا بھی دکان ہوگئی ہے
  • اکثر شب ہجر دوست کی یاد
  • تنہائی کی جان ہوگئی ہے
  • شرکت تری بزمِ قصہ گو میں
  • افسانے کی جان ہوگئی ہے
  • جو آج مری زبان تھی کل
  • دنیا کی زبان ہوگئی ہے
  • اک سانحہِ جہاں ہے وہ آنکھ
  • جس دن سے جوان ہوگئی ہے
  • رعنائی قامت دل آرا
  • میرا ارمان ہوگئی ہے
  • دل میں اک واردات پنہان
  • بے سان گمان ہوگئی ہے
  • سنتا ہوں قضائے قہرما بھی
  • اب تو رحمان ہوگئی ہے
  • واعظ مجھے کیا خدا سے
  • میرا ایمان ہو گئی ہے
  • میری تو یہ کائنات غم بھی
  • جان و ایمان ہوگئی ہے
  • میری ہر بات آدمی کی
  • عظمت کا نشان ہوگئی ہے
  • یاد ایام عاشقی جب
  • ابدیت اک آن ہوگئی ہے
  • جو شوخ نظر تھی دشمن جاں
  • وہ جان کی جان ہوگئی ہے
  • ہر بیت فراقؔ اس غزل کی
  • ابرو کی کمان ہو گئی ہے