Advertisement

تانیثیت اُن افکار و نظریات کا مجموعی اظہار ہے جو خواتین کو عزت و وقار کے ساتھ اُن کے حقوق کو یقینی بناتا ہو۔ مساوات کی حمایت اور عصبیت کی مخالفت کی بدولت آج یہ سب سے طاقت ور نظریۂ فکر و عمل ثابت ہو رہا ہے۔ وہ اس لیے کہ عورت نے اپنے آپ، اپنی مخصوص صلاحیتوں کو پہچان لیا ہے۔ اب وہ دور نہیں رہا کہ ؎

Advertisement
زندگی سے نباہ کرتے رہے
شعر کہتے رہے سلگتے رہے
(نوشی گیلانی)

یاسمین حمید کہتی ہیں ؎

Advertisement
آئی جب اُس کے مقابل تو نیا بھید کھُلا
مجھ کو اندازہ نہ تھا اپنی توانائی کا

توانائی کے اس احساس کے ساتھ وہ مزید لکھتی ہیں ؎

Advertisement
حدوں کو بھول جانا چاہتی ہوں
خلاؤں میں ٹھکانہ چاہتی ہوں
میں اب اپنی اکائی چاہتی ہوں
اور تجھ سے جدائی چاہتی ہوں
تحریرمحمد ذیشان اکرم
Advertisement

Advertisement

Advertisement