>
  • آہ جاں سوز کی محرومی تاثیر نہ دیکھ
  • ہو ہی جائے گی کوئی جینے کی تدبیر نہ دیکھ
  • حادثے اور بھی گزرے تری الفت کے سوا
  • ہاں مجھے دیکھ مجھے اب میری تصویر نہ دیکھ
  • یہ ذرا دور پہ منزل یہ اجالا یہ سکوں
  • خواب کو دیکھ ابھی خواب کی تعبیر نہ دیکھ
  • دیکھ زنداں سے پرے رنگ چمن جوش بہار
  • رقص کرنا ہے تو پھر پاؤں کی زنجیر نہ دیکھ
  • کچھ بھی ہو پھر بھی دکھے دل کی صدا ہوں ناداں
  • میری باتوں کو سمجھ تلخی تقریر نہ دیکھ
  • وہی مجروحؔ وہی شاعر آوارہ مزاج
  • کون اٹھا ہے تری بزم سے دلگیر نہ دیکھ
Close Menu