Advertisement

جامع

وہ کتاب ہے جس میں تفسیر، عقائد، آداب، احکام، مناقب، سیر، فتن، علاماتِ قیامت وغیرہ ہرقسم کے مسائل کی احادیث مندرج ہوں، کماقیل
سیر آداب وتفسیر وعقائد فتن احکام واشراط ومناقب۔ جیسے بخاری وترمذی۔

سُنن

وہ کتاب ہے جس میں احکام کی احادیث، ابواب فقہ کی ترتیب کے موافق بیان ہوں، جیسے سنن ابی داؤد وسنن نسائی، وسنن ابنِ ماجہ۔

Advertisement

الصحیح

یہ وہ کتابیں ہیں جن میں اُن کے مؤلفین نے اپنے خیال میں صرف صحیح احادیث لانے کا التزام کیا ہو، جیسے صحیح بخاری، صحیح مسلم، صحیح ابنِ خزیمہ، صحیح ابنِ حبان وغیرہ۔

Advertisement

مسند

وہ کتاب ہے جس میں صحابہ کرام علیھم الرضوان کی ترتیب رتبی یاترتیب حروف ہجا یاتقدم وتأخر اسلامی کے لحاظ سے احادیث مذکور ہوں، جیسے مسند احمد ومسند دارمی۔

Advertisement

معجم

وہ کتاب ہے جس کے اندر وضع احادیث میں ترتیب اساتذہ کا لحاظ رکھا گیا ہو، جیسے معجم طبرانی۔

المصنف

جن میں روایات محض جمع کرنے کے اِرادے سے لکھی گئی ہوں، جیسے المصنف لعبدالرزاق (۲۱۱ھ)، المصنف لابنِ ابی شیبۃ (۲۳۵ھ) یہ دونوں مصنف۔

Advertisement

جزء

وہ کتاب ہےجس میں صرف ایک مسئلہ کی احادیث یک جا جمع ہوں،جیسےجزءالقرأۃ وجزء رفع الیدین للبخاری وجزء القرأۃ للبیہقی۔

مفرد

وہ کتاب ہے جس میں صرف ایک شخص کی کل مرویات ذکر ہوں۔

Advertisement

مستخرج

وہ کتاب ہے جس میں دوسری کتاب کی حدیثوں کی زائد سندوں کا استخراج کیا گیا ہو، جیسے مستخرج ابی عوانہ۔

مستدرک

وہ کتاب ہے جس میں دوسری کتاب کی شرط کے موافق اس کی رہی ہوئی حدیثوں کوپورا کردیا گیا ہو، جیسے مستدرک حاکم۔

Advertisement

مؤطا

جس کتاب کومؤلف نے دوسرے علماء کے سامنے پیس کیا ہو اور انہوں نے اس پر اتفاق فرمایا ہو، اسے مؤطا کہتے ہیں، جیسے مؤطا ابنِ ابی ذئبؒ (۱۵۹ھ)، مؤطا امام مالکؒ (۱۷۹ھ)، مؤطاامام محمدؒ (۱۸۹ھ) وغیرہ۔

تحریرابو عمر غلام مجتبیٰ قادری
Advertisement

Advertisement