اردو میں حروف تہجی کی کل تعداد سینتیس (37) ہے۔
ا، آ، ب، پ، ت، ٹ، ث، ج، چ، ح، خ، د، ڈ، ذ، ر، ڑ، ز، ژ، س، ش، ص، ض، ط، ظ، ع، غ، ف، ق، ک، گ، ل، م، ن، و، ہ، ی، ے۔

مرکب حروف

وہ حروف ہیں جو ہائے دو چشمی (مخلوط) سے مل کر بنتے ہیں۔ یہ کل تعداد میں 15 ہیں۔
بھ، پھ، تھ، ٹھ، جھ، چھ، دھ، ڈھ، زھ، ڑھ، کھ، گھ، لھ، مھ، نھ۔

زبان کے جدید اصولوں کے مطابق الف ایک جبکہ الف + الف=آ شمار کیا جاتا ہے۔ اسی طرح ہائے مخلوط (ھ) اردو میں کبھی لفظ کے شروع میں نہیں آتا۔ ہمزہ اردو میں پورا حرف شمار نہیں ہوتا، یہ بسااوقات بطور اضافت آتا ہے مثلاً سرمایہ اردو، مجموعہ کلام، تحفہ خلوص وغیرہ۔

حروف بلحاظ حرکات

تلفظ یا صوتی لحاظ سے اردو میں حروف کی دو اقسام ہیں۔

1- حروف علت

“الف، واؤ اور یا” وہ حروف جن کے ملانے سے الفاظ میں حرکت پیدا ہوتی ہے، ان الفاظ کو حروف علت کہا جاتا ہے۔ جیسے: ب+ا= با، ب+و= بُو اور س+ی=سی وغیرہ۔ حروف علت کو انگریزی میں Vowels کہا جاتا ہے۔

2- حروف صحیح

وہ حروف جو کسی حرف علت یا علامت حرکت (زبر، زیر، پیش) کے بغیر آپس میں مل کر کوئی آواز پیدا نہیں کر سکتے حروف صحیح کہلاتے ہیں۔
جیسے: ب، پ، ت، ج، د، س، م وغیرہ۔ حروف صحیح کو انگریزی میں Consonants کہا جاتا ہے۔

Advertisements