دولت کی اہمیت پر مضمون

موجودہ دور کے مسابقتی معاشرے اور اس مہنگائی کے دور حکومت میں پیسہ کے بغیر زندہ رہنا بہت مشکل ہو گیا ہے۔ ہمیں اپنی بنیادی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے پیسوں کی ضرورت پڑتی ہے۔اچھا کھانا خریدنا ، پانی یا دودھ خریدنا، ٹی وی دیکھنا ، اخبارات خریدنا، اچھے کپڑے پہننا ، اسکول میں داخلہ لینا ، تعلیم حاصل کرنا اور زندگی کی دیگر بنیادی ضروریات کو پیسوں کے بغیر حاصل نہیں کیا جا سکتا۔ معاشرے میں جو لوگ دولت مند اور جائیداد کے مالک ہوتے ہیں وہ معاشرے میں قابل احترام فرد سمجھے جاتے ہیں اور ایک غریب شخص کو نفرت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔

پیسوں کی ضرورت

پیسہ معاشرے میں فرد کے وقار میں اضافہ کرتا ہے اور اس کی اچھی شبیہ استوار کرتا ہے۔ ہم سب کاروبار اور اچھی نوکری وغیرہ کے ذریعے زیادہ سے زیادہ پیسہ کما کر دولت مند بننا چاہتے ہیں تاکہ ہم جدید دور کی بڑھتی ہوئی ضروریات کو آسانی سے پورا کرسکیں۔ تاہم کروڑ پتی بننے کے اپنے خواب کو پورا کرنے کا موقع بہت کم لوگوں کو ملتا ہے۔

دولت سب کی ضرورت ہے خواہ وہ غریب ہو یا امیر اور شہری ہو یا دیہاتی سب کو پیسوں کی ضرورت پڑتی ہے۔ شہری علاقوں میں رہنے والے افراد دیہی علاقوں میں رہنے والے لوگوں کی نسبت زیادہ رقم کماتے ہیں کیونکہ شہری علاقوں میں لوگوں کو ٹیکنالوجی تک پہنچنے میں بہت آسانی ہوتی ہے اور ان کے پاس زیادہ وسائل موجود ہوتے ہیں جس سے ان کی آمدنی کا امکان بڑھ جاتا ہے۔ اس کے برعکس دیہی علاقوں کے لوگ ترقی کے میدان میں پیچھے رہ جاتے ہیں اور شہری علاقے مزید ترقی یافتہ ہوجاتے ہیں۔

رقم کی اہمیت

دولت کی عدم موجودگی میں کسی شخص کی موت یقینی ہوتی ہے اور اگر وہ زندہ رہتا ہے تو اسے بہت سی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ دولت ہمیں تمام ضروری چیزیں خریدنے کے قابل بناتی ہے اور زندگی بھر ہماری مدد کرتی ہے۔ اگر ہم زندگی میں پیسہ کی اہمیت کو سمجھیں تو پھر ہم کبھی بھی اس کا غلط استعمال یا فضول خرچ نہیں کریں گے۔ ہم پیسہ اور محنت کا موازنہ نہیں کرسکتے کیوں کہ کامیاب زندگی گزارنے کے لئے ہمیں پیسہ اور محنت دونوں کی ضرورت ہوتی ہے۔

اس مسابقتی دنیا میں اچھی نوکری حاصل کرنے اور پیسہ کمانے کے لیے ہر ایک شخص کو معروف کالج یا یونیورسٹی سے اعلی تعلیم حاصل کرنی چاہیے۔ جس کی وجہ سے وہ اچھا پیسہ کما سکیں۔ وہ اپنی اور کنبے کے تمام افراد کی ضرورت کو پورا کر سکیں۔ اس وجہ سے ایک فرد کو زیادہ سے زیادہ رقم کمانے کی ضرورت ہوتی ہے خاص کر اس شخص کے لئے جو خاندان میں صرف کمانے والا اکیلا شخص ہو۔

ایک شخص کو کھانے ، پہننے اور جینے کے لیے اور اپنے خاندان کے تمام افراد کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے پیسوں کی ضرورت ہوتی ہے۔ جس کے لئے وہ دن رات محنت کرتا ہے۔ معاشرے میں امیروں کی خصوصی پہچان اور شہرت ہوتی ہے اور غریب لوگوں کی ایسی پہچان نہیں ہوتی۔ وہ صرف دو وقت کے کھانے میں اپنی زندگی گزارتے ہیں۔ یہ تمام تبدیلیاں اور اختلافات صرف اور صرف دولت کی وجہ سے ہیں۔

نتیجہ

پیداوار ، تبادلہ ، تقسیم ، عوامی محصولات وغیرہ کے شعبوں میں بڑے پیمانے پر رقم کی اہمیت میں اضافہ ہوا ہے۔ یہ آمدنی ، ملازمت ، آمدنی کی کارپوریشن ، عمومی قیمت کی سطح وغیرہ کے تعین میں بہت اہم کردار ادا کرتا ہے۔ اگر ہم موجودہ حالات کو دیکھیں تو اس میں کوئی شک نہیں کہ جس کے پاس بہت زیادہ دولت ہے وہ دنیا میں زیادہ مہذب سمجھا جاتا ہے۔ پہلے زمانے میں ایک تبادلہ نظام کے نام سے ایک رواج تھا جس میں کسی کو بھی کسی ایک چیز کے بدلے میں دوسری چیز مل جاتی تھی ۔ تاہم اب اس جدید دنیا میں ہر چیز کو خریدنے کے لئے صرف پیسوں کی ضرورت ہوتی ہے۔

Advertisements