Advertisement

انسان کو ایک سماجی جانور کہا گیا ہے۔ اس کے ارد گرد اسے ایک ماحول دے دیا گیا ہے۔ جب وہ اس ماحول کو گدلا کرے گا تو اس ماحول میں منفی رججان پیدا ہوگا جس سے انسان ، حیوان ، چرند ، پرند ، حیوانات ، نباتات اور تمام مخلوقات متاثر ہوں گی۔ یہ منفی تبدیلیاں آبی مخلوقات اور جو پانی ہم استعمال کرتے ہیں اس پر بھی اپنا گہرا اثر چھوڑتی ہیں۔ کیمیائی آلودگی مادے یا توانائی کی شکل اختیار کر سکتی ہے، جیسے شور، حرارت، روشنی اور دیگر آلودگی مل کر معاشرے میں بگاڑ پیدا کرتی ہیں۔

Advertisement

آلودگی کا ذریعہ

آلودگی کا اکثر نقطہ ذریعہ یا نان پوائنٹ ذریعہ آلودگی کے طور پر درجہ بندی کیا جاتا ہے۔ ۲۰۱۵ میں آلودگی نے دنیا میں ۹ لاکھ افراد کو ہلاک کیا۔

Advertisement

آلودگی کی اقسام

فضائی آلودگی ،  آواز کی آلودگی  ، زمینی کی آلودگی   ، آبی آلودگی وغیرہ۔

Advertisement

فضائی آلودگی

لکڑی اور کوئلے کے جلنے سے فضا میں ایک ناقابلِ برداشت قسم کا دھواں ہوا میں بلند ہو کر ہوا کو آلودہ بنانے کا ذریعہ بنتا ہے۔ صنعتوں کے نئے نئے کیمیائی تجربات سے اور ان کے رف استعمال سے ماحول میں ہوا کی آلودگی بڑھتی ہے۔

آبی آلودگی

انہی فیکٹریوں سے نکلنے والے ، ضائع ہونے والے مواد کو نہروں میں چھوڑ دیا جاتا ہے جس سے ہوا تو آلودہ ہو ہی رہی تھی پانی بھی آلودہ ہونے لگتا ہے۔ آبی آلودگی سے نہ صرف آبی مخلوق بلکہ انسان بھی متاثر ہوتے ہیں۔ صنعتی انقلاب سے ہی ماحول آلودگی کی اس نہج پر پہنچ گیا ہے کہ اب موسم جلدی اپنی مدت پوری کرنے لگے ہیں۔

Advertisement

زمینی آلودگی

زمین پر پلاسٹک کے بے جا استعمال اور بے رحمی سے اسے ادھر ادھر پھینک دینے سے پلاسٹک کی بوتلیں، شاپنگ بیگ جنگلات کی زندگی ، جنگلی مخلوق اور انسانوں کو بری طرح متاثر کر رہی ہیں۔ پلاسٹک سستا اور پائے دار ہے اور اس کے نتیجے میں انسانوں کے استعمال کے مطابقت سے اس کی پیداوار بھی زیادہ ہے۔

پلاسٹک سے زمینی ،آبی اور سمندری مخلوق متاثر ہوتی ہے۔
ایک اندازے کے مطابق ہر سال ساحلی برادریوں کی جانب سے ۱.۱ سے ۸.۸ ملین ٹن پلاسٹک کا فضلہ سمندر میں داخل ہوتا ہے۔

Advertisement

زندہ حیاتیات ، خاص طور پر سمندری جانوروں کو یا تو میکانکی اثرات ، جیسے پلاسٹک کی چیزوں میں الجھنا ، پلاسٹک کے کچرے کے گھماؤ سے متعلق مسائل ، یا پلاسٹک کے اندر کیمیائی مادے کے ذریعے نقصان پہنچایا جاسکتا ہے۔

کچھ محققین کے مطابق ہے کہ ۲۰۵۰ تک وزن کے حساب سے سمندروں میں مچھلی سے زیادہ پلاسٹک ہوسکتا ہے۔

Advertisement

مٹی کی آلودگی

مٹی کی آلودگی زمین کے انحطاط کے ایک حصے کے طور پر انسان ساختہ کیمیکلز کی موجودگی یا قدرتی مٹی میں دیگر رد وبدل کی وجہ سے ہوتی ہے۔ یہ عام طور پر صنعتی سرگرمی ، زرعی کیمیائی مادے یا کچرے کو غلط طریقے سے ضائع کرنے کی وجہ سے ہوتا ہے۔ اس میں شامل سب سے عام کیمیائی مادے ہیں۔

پیٹرولیم ہائیڈروکاربن ، پولیونکئرل ارومائٹ ہائڈروکاربن ، سالوینٹس ، کیڑے مار دوا ، سیسہ اور دیگر بھاری دھاتیں۔ آلودگی کا تعلق صنعت کی ڈگری اور کیمیائی مادے کی شدت سے ہے۔ مٹی کی آلودگی پر تشویش بنیادی طور پر صحت کے خطرات ، آلودہ مٹی سے براہ راست رابطے، آلودگیوں سے بخارات ، یا مٹی کے اندر کی ثانوی آلودگی سے ہوتی ہے۔
زمینی آلودگی سے موسم میں غیر معمولی تبدیلی آئی ہے جس سے خطرہ بڑھ گیا ہے اگر ایسے ہی چلتا رہا تو ہماری نیلی نیلی نظر آنے والی زمین چند برسوں میں بہت سی تباہیوں سے دوچار ہوجائے گی۔

Advertisement
Advertisement

Advertisement

Advertisement